in

دس ہزار چینی کی بوریاں خریدتا ہوں اور جتنے کی خریدتا ہوں اتنے کی ہی بیچ دیتا ہوں پھر بھی 1لاکھ روپے کا فائدہ ہوتا ہے

اسلام آباد(ویب ڈیسک) ایک صاحب تھے وہ چینی کا بزنس کرتے تھے جتنے میں چینی خریدتے تھے اتنے میں ہی بیچ دیا کرتے تھے ، وہ روز کا لاکھ روپیہ کماتے تھے ، لوگ بڑے حیران ہوتے تھے کہ یہ خدا کا بندہ اگر سو روپے من خریدتا ہے تو سو

روپے من ہی بیچتا ہے پھر اس کو فائدہ کہاں سے ہوتا ہے ؟ کچھ سمجھ نہیں آتی ، چنانچہ کسی نے پوچھا کہ بھئی آپ کو فائدہ کیسے ہوتا ہے ؟ اس نے کہا: جناب! بات یہ ہے کہ میں روزانہ دس ہزار بوریاں بیچتا ہوں ، میں جب خریدتا ہوں تو بوری میں خریدتا ہوں اور جب میں بیچتا ہوں تو بوری کے بغیر بیچتا ہوں ، چینی میں اسی قیمت پر بیچتا ہوں ، لیکن نفع میں مجھے خالی بوری بچ جاتی ہے تو دس ہزار بوری روزانہ بچتی ہے ، ایک بوری دس روپے کی بک جاتی ہے، یوں دس ہزار بوریوں کے بدلے مجھے ایک لاکھ روپے کا فائدہ ہو جاتا ہے ۔ چینی میں اسی قیمت پر بیچتا ہوں ، لیکن نفع میں مجھے خالی بوری بچ جاتی ہے تو دس ہزار بوری روزانہ بچتی ہے ، ایک بوری دس روپے کی بک جاتی ہے ، یوں دس ہزار بوریوں کے بدلے مجھے ایک لاکھ روپے کا فائدہ ہو جاتا ہے ۔ یہ ہے عقل معاش ، عقل نے وہاں سے بھی فائدہ ڈھونڈ لیا جہاں سے عام آدمی کو فائدہ محسوس نہیں ہوتا۔

Share

Written by Admin

Sahil Aqeel is a passionate Web Blogger | Digital Marketer | Copywriter.

Sahil loves animals.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

پاکستان کے دن پھرگئے۔۔!!! اربوں ڈالرز کے نئے منصوبے۔۔۔ روس پاکستانی معیشت کو سہارا دینے کیلئے تیار ہوگیا

جیولرز کیسے لوگوں کو بیوقوف بناتے ہیں یہ تحریر پڑھ کر آپ کو اندازہ ہو جائے گا۔سونا خریدنے سے پہلے ایک دفعہ یہ تحریر ضرور پڑھ لیں