Breaking News
Home / دلچسپ و عجیب / 10بچوں کا باپ ہوں ، 47سال ہو گئے شادی کو مگر کبھی بیوی کی شکل نہیں دیکھیں ، وجہ ایسی کہ پاکستانی مرد و خواتین ہکا بکا رہ گئے جان کر

10بچوں کا باپ ہوں ، 47سال ہو گئے شادی کو مگر کبھی بیوی کی شکل نہیں دیکھیں ، وجہ ایسی کہ پاکستانی مرد و خواتین ہکا بکا رہ گئے جان کر

جدہ(نیوز ڈیسک ) یہ دُنیا عجیب و غریب واقعات اور اتفاقات سے بھری پڑی ہے جن پر کئی بار یقین کرنے کو دل نہیں چاہتا۔ میاں بیوی ایک دوسرے کی شکل، مزاج اور حالات سے پوری طرح واقف ہوتے ہیں مگر سعودی عرب میں ایک بزرگ ایسا بھی ہے جس کی شادی کو 47 سال ہو گئے، اس کی بیوی نے

اس عرصے میں 10 بیٹے بیٹیوں کو جنم دیا، مگر وہ زندگی کے ان ہزاروں دنوں میں ایک بار بھی اپنی جیون ساتھی کی جھلک نہیں دیکھ پایا۔ اس بزرگ کی ویڈیو نے سوشل میڈیا پر بے انتہا مقبولیت حاصل کر لی ہے جس پر بہت سنجیدہ اور دلچسپ بحث جاری ہے۔ لوگ حیران ہیں کہ ایسا کیسے ممکن ہے۔ ایک ساتھ رہتے ہوئے بھی بیوی کے چہرے سے ناآشنا ہونا ناممکن سی بات لگتی ہے۔ بزرگ نے ایک نوجوان سے گفتگو میں بتایا کہ جوانی سے بڑھاپے میں داخل ہونے کے باوجود وہ اپنی بیوی کے چہرے سے ناواقف ہے۔ حالانکہ اس مُدت میں ان کے دس بچے بھی ہو چکے ہیں۔ جب سعودی بزرگ سے وجہ پوچھی گئی تو اس کا کہنا تھا ” وہ قبائلی روایات اور اپنے شرم و حیا کے کردار کے زیر اثر کسی کے سامنے بھی اپنا چہرہ ظاہر کرنے کو انتہائی بُرافعل خیال کرتی ہے۔ وہ اپنا چہرہ نہیں دکھانا چاہتی تھی، میں نے بھی اسے کبھی مجبور نہیں کیا۔“ اس ویڈیو کلپ پر سوشل میڈیا پر بحث جاری ہے۔ ایک سعودی نوجوان کا کہنا تھا ” یہ بزرگ سچ کہہ رہا ہے کیونکہ سعودی عرب اور یمن کے کچھ خطوں خصوصا معرب کے علاقے میں بھی خواتین کا چہرہ اپنے خاوند اور بھائیوں سے بھی چھپانے کا رواج ہے ۔ حتیٰ کہ میری ایک خالہ کے شوہر اور بچوں نے بھی ان کا چہرہ کبھی نہیں دیکھا۔ ان کی شادی کو 26 سال ہو چکے ہیں“ ایک اور ٹویٹر صارف نے بھی تائید کی ہے کہ اسے یونیورسٹی کے ایک سینیئر اُستاد نے بھی اسی طرح کے کئی واقعات سُنائے تھے، جن میں شوہروں نے اپنی بیویوں کا ساری عمر چہرہ نہیں دیکھا تھا۔

Share

About admin401

Check Also

خاتون کی وفات کے 2100سال بعد جب اس کے تابوت کو کھولا گیا تولوگوں نے اس میں ایسا کیا دیکھا کہ سب کے ہوش اڑ گئے

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) چلیں ہم آج آپ سے سوال کرتے ہیں کہ کسی کی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com