Breaking News
Home / انٹرنیشنل / سیاہ رنگ کا نایاب سیب، دنیا میں کہا پایا جاتا ہے

سیاہ رنگ کا نایاب سیب، دنیا میں کہا پایا جاتا ہے

سیب عموماً لال ، ہرے ، پیلے یا انہی رنگوں سے ملتے جلتے ہوتے ہیں لیکن اب آپ کو گاڑھے جامنی یا سیاہ رنگ کے سیب بھی کھانے کو مل سکتے ہیں ۔ یہ نایاب سیب چین کے علاقے تبت کے خاص جغرافیائی حالات میں اگتے ہیں اور انہیں ‘بلیک ڈائمنڈ ایپل’یعنی سیاہ ہیرا

کہا جاتا ہے ۔ ایک چینی ای کامرس کمپنی تبت کے علاقے میں سطح سمندر سے 3100 میٹر بلندی پر 50 ایکڑ رقبے پر ان یہ نایاب سیبوں کو اُگا رہی ہے۔ اس علاقے میں دن اور رات کے درجہ حرارت میں بہت زیادہ فرق ہوتا ہے اور وہاں اس پھل کو بہت زیادہ سورج کی روشنی اور الٹراوائلٹ روشنی ملتی ہے جس سے ان کا رنگ گاڑھا جامنی ہو جاتا ہے۔یہ سیب 2015 میں اگنا شروع ہوئے لیکن کئی وجوعات کی وجہ سے یہ بیجنگ ، شنگھائی، گوانگزو اور شینزن کی اونچے طبقے کی سپر مارکیٹوں میں ہی نظر آتا ہے اور اس کی قیمت بھی انتہائی زیادہ ہے۔ دوسری طرف ایک کثیرالازدواج چینی نے خفیہ طور تین شادیاں کیں اور اپنی سہولت کے لیے سب کو ایک کلومیٹر کے علاقے میں اپارٹمنٹس دلا دئیے اور اس کی یہی غلطی سب بیویوں سے ہاتھ دھونے اور جیل جانے کا باعث بن گئی ۔36 سالہ شخص ، جس کا خاندانی نام زہانگ ہے ، کو ایک سے زیادہ شادیاں کرنے پر 2 سال کی سزا سنائی گئی ہے۔ قانونی طور پر چین میں ایک سے زیادہ شادیاں نہیں کی جاسکتی لیکن زہانگ نے ایک انتظامی خامی سے فائدہ اٹھاتے ہوئے تین شادیاں کر لیں۔ زہانگ نے یہ شادیاں تین

سالوں میں کیں ہیں۔ زہانگ چین کے مشرقی صوبے جیانگسو کے شہر کنشان میں پراپرٹی کا کام کرتا تھا۔ اس کام میں زہانگ نے کافی پیسہ بنایا، اس لیے تین خاندانوں کو پالنا زہانگ کے لیے مسئلہ نہیں تھا۔ اس نے اپنی بیویوں کو الگ الگ شہروں میں اپارٹمنٹس لے کر دئیے ہوئے تھے۔ہفتے میں 10 دفعہ سفر کرنے کے باعث زہانگ کو کافی تھکن ہوجاتی تھی ۔اس کا حل اس نے یہی سوچا کہ سب بیویوں کو قریب قریب اپارٹمنٹ لے کر دے۔ اس نے ایک کلومیٹر کے علاقے میں تین اپارٹمنٹ خریدے اور اپنی بیویوں کو ان میں منتقل کر دیا۔ہینان صوبے سے تعلق رکھنے والے زہانگ نے 2015 میں پہلی شادی رین نامی خاتون سے کنشان میں کی۔ ایک سال بعد دوسری شادی اپنے آبائی صوبے میں چن نامی خاتون سے کی۔ 2017 میں زہانگ نے وانگ نامی خاتون سے اس کے شہر انہوئی میں شادی کی۔جیانگسو براڈکاسٹنگ کارپوریشن کے مطابق زہانگ کا ہر بیوی سے ایک بچہ بھی ہے۔زہانگ کی تینوں شادیاں قانونی ہیں۔ حکام کے مطابق زہانگ کو معلوم تھا کہ شہری حکام دوسرے صوبوں سے اپنا ڈیٹا شیئر نہیں کرتے، اس وجہ سے وہ تین صوبوں سے تین شادیوں کے قانونی سرٹیفیکیٹس حاصل کرنے میں کامیاب ہوگیا لیکن زہانگ کا کہنا ہے کہ اسے معلوم ہی نہیں تھا کہ ایک سے زیادہ شادی غیر قانونی ہوتی ہے۔

Share

About admin401

Check Also

اب نظر آئی تبدیلی ۔۔سابق صدر مملکت کو قی۔د کی سز۔ا سنا دی گئی

اب نظر آئی تبدیلی ۔۔سابق صدر مملکت کو قی۔د کی سز۔ا سنا دی گئی یہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com