Breaking News
Home / پاکستان / سارے تعلیمی ادارے بند اور امتحانات بھی ملتوی ، حکومت کا بڑا فیصلہ

سارے تعلیمی ادارے بند اور امتحانات بھی ملتوی ، حکومت کا بڑا فیصلہ

سارے تعلیمی ادارے بند اور امتحانات بھی ملتوی ، حکومت کا بڑا فیصلہ

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے صوبائی وزرائے تعلیم کے ساتھ اجلاس کے بعد اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے

کہا کہ حکومت سندھ نے سارے تعلیمی ادارے بند اور امتحانات بھی ملتوی کر دیے ہیں ۔ وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا کہ کورونا وائرس کے باعث بند کیے گئے تعلیمی ادارے

سندھ کے علاوہ ملک کے دیگر صوبوں میں بتدریج کھولے جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ سندھ کے وزیر تعلیم نے بھی اجلاس میں حصہ لیا اور کہا کہ 8 اگست سے پہلے جائزہ لے کر اسکول کھولنے اور امتحانات

کے نئے لائحہ عمل کا فیصلہ کریں گے۔ان کا کہنا تھا کہ وفاقی علاقے، پنجاب، خیبرپختونخوا، گلگت بلتستان، آزاد کشمیر سب نے فیصلہ کیا کہ اسکول بتدریج کھولے جائیں گے، 50 فیصد حاضری کے ساتھ بچے اسکولوں میں آئیں گے۔شفقت محمود نے کہا کہ یونیورسٹیوں کے حوالے سے فیصلہ کیا گیا کہ جیسے جیسے

یونیورسٹیاں کھلتی ہیں تو ان پر پابندی نہیں ہوگی اور اسی طرح انٹرمیڈیٹ کالجوں پر بھی پابندی نہیں ہوگی۔انہوں نے کہا کہ تھوڑی سی تشویش کا اظہار کیا گیا کہ تعلیمی اداروں میں ویکسنیشن مجموعی طور پر 83 فیصد پر پہنچی ہے لیکن ہائیر ایجوکیشن میں کمی ہے اور اس میں بہتری کی ضرورت ہے۔ان کا کہنا تھا کہ اس حوالے سے وزرائے تعلیم سے درخواست

کی گئی کہ اپنے اپنے صوبوں میں جامعات کے اندر خصوصی کوششیں کی جائیں کیونکہ وہاں کے طلبہ 18 سال سے زائد عمر کے ہوتے ہیں اور سارے اساتذہ کی ویکسینیشن کی جائے۔وزیرتعلیم نے کہا کہ بچوں کو اسکول لے جانے اور واپس لانے والے ٹرانسپورٹ کے ڈرائیور سمیت پورے عملے کی ویکسینیشن بھی

ضروری ہے اور اس کے لیے 31 اگست کی ڈیڈ لائن دی گئی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ امتحانات کے نئے اوقات آئیں گے اور اسی کے مطابق جاری رہیں گے، سندھ کا بھی نیا ٹائم ٹیبل آجائے گا، شاید ان کے چند ایک کلاسز کے امتحانات رہتے ہیں جبکہ دیگر صوبوں میں نویں، دسویں، گیارھویں اور بارھویں جماعت کے امتحانات اپنے وقت پر ہوتے رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ سارے وزرائے تعلیم نے کہا تھا نویں، دسویں، گیارھویں اور بارھویں جماعت کا امتحان صرف منتخب مضامین کا ہوگا اور اس کے نمبر اسی شرح سے لازمی مضامین کو بھی دیے جائیں گے لیکن فیصلہ یہ ہوا ہے کہ اب آزاد جموں و کشمیر اور گلگت بلتستان سمیت سارے صوبوں میں لازمی مضامین کے نمبرز میں مزید 5 فیصد کا اضافہ کردیا جائے گا۔شفقت محمود نے کہا کہ سارے طلبہ کو لازمی مضامین میں 5 فیصد اضافی نمبر دیے جائیں گے کیونکہ تحقیق کے مطابق لازمی مضامین میں نمبر زیادہ آتے ہیں اس لیے زیادہ نمبر شامل کر دیے گئے ہیں۔

Share

About admin401

Check Also

مدینہ منورہ پہنچتے ہی وزیراعظم عمران خان کا ایسا اقدام کہ پاکستانی دھاڑیں مار مار کر رونے لگے

مدینہ منورہ پہنچتے ہی وزیراعظم عمران خان کا ایسا اقدام کہ پاکستانی دھاڑیں مار مار …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com